دل و نگاہ مسلماں نہیں تو کچھ بھی نہیں.....اقبال

Published on by KHAWAJA UMER FAROOQ


بے خطر کود پڑا آتش نمرود میں عشق
عقل ہے محو تماشائے لبِ بام ابھی
خرد کی گتھیاں سلجھا چکا میں
مرے مولا مجھے صاحب جنوں کر
خرد نے کہہ بھی دیا لا الہٰ تو کیا حاصل
دل و نگاہ مسلماں نہیں تو کچھ بھی نہیں



Enhanced by Zemanta

Published on Urdu Poetry, Urdu, Allama Iqbal

Comment on this post