زندہ رہیں تو کیا ہے جو مر جائیں ہم تو کیا

Published on by KHAWAJA UMER FAROOQ


زندہ رہیں تو کیا ہے جو مر جائیں ہم تو کیا
دنیا سے خاموشی سے گزر جائیں ہم تو کیا
ہستی ہی اپنی کیا ہے زمانے کے سامنے
اک خواب ہیں جہاں میں بکھر جائیں ہم تو کیا
اب کون منتظر ہمارے لئے وہاں
شام آگئی ھے لوٹ کے گھر جائیں ہم تو کیا
دل کی خلش تو ساتھ رہے گی تمام عمر
دریائے غم کے پار اتر جائیں ہم تو کیا

Enhanced by Zemanta

Comment on this post